بسم الله الرحمن الرحيم

Thursday, 27 April 2017

The condoled Satisfying Letter of Prophet Hazrat Muhammad(SAW)| In Urdu

رسول اللہ ﷺ کا تسلی آمیز تعزیتی خط
Rasool

رسول اللہ ﷺ کا تسلی آمیز تعزیتی خط

 حضور اقدس ﷺ کا مکتوب حضر ت معاذ بن جبل رضی اللہ عنہ کے نام ، حضرت معاذ بن جبل رضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ ان کے بیٹے کا انتقال ہو گیا تو رسول اللہ ﷺ نے ان کو تعزیت نامہ لکھوایا جس کا ترجمہ یہاں نقل کیا گیا ہے ۔

 "شروع اللہ کے نام سے جو بڑا رحم کرنے والا اور مہربان ہے اللہ کے رسول محمد ﷺ کی جانب سے معاذ بن جبل کے نام " تم پر سلامتی ہو میں پہلے تم سے اللہ تعالیٰ کی حمد بیان کرتا ہوں جس کے سوا کوئی معبود نہیں ، حمد وثنا ء کے بعد (دعا کرتا ہوں کہ ) اللہ تمہیں اجر عظیم عطا فرمائے اور تمہیں شکر ادا کرنا نصیب فرمائے اس لئے کہ بیشک ہماری جانیں، ہمارا مال اور ہمارے اہل و عیال (سب ) اللہ بزرگ وبرتر کے خوشگوار عطیے اور عاریت کے طور پر سپرد کی ہوئی امانتیں ہیں (اس اصول کے مطابق تمہارا بیٹا بھی تمہارے پاس اللہ کی امانت تھا ) اللہ تعالیٰ نے خوشی اور عیش کے ساتھ تم کو اس سے نفع اٹھانے اور جی بہلانے کا موقع دیا اور (اب) تم سے ا س کو اجر عظیم کے عوض میں واپس لے لیا ہے ، اللہ کی خاص نوازش اور رحمت وہدایت (کی تم کو بشارت ہے ) اگر تم نے ثواب کی نیت سے صبر کیا پس تم صبر وشکر کے ساتھ رہو (دیکھو )تمہارا رونا دھونا تمہارے اجر کو ضائع نہ کردے کہ پھر تمہیں پشیمانی اٹھانی پڑے اور یاد رکھو کہ رونا دھونا کسی مصیبت کو لوٹا کر نہیں لاتا اور نہ ہی غم واندوہ کو دور کرتاہے اور جو ہونے والا ہے وہ تو ہو کر رہے گا اور جو ہونا تھا ہو چکا "۔  (والسلا)
م
تالیف :    مفتی اعظم حضرت مولانا محمد شفیع صاحب رحمہ اللہ 

Post a Comment